Clicky

تازہ ترین خبر
ہوم / اہم موضوعات / شین وارن بمقابلہ انیل کمبلے، کون کتنا بھاری؟

شین وارن بمقابلہ انیل کمبلے، کون کتنا بھاری؟

ویسے تو شین وارن اور انیل کمبلے کی کلاس میں بظاہر واضح فرق دکھائی دیتاہے،آسٹریلوی اسپنرزکو ٹیسٹ میچوں میں نسبتاً 100 سے زائد وکٹیں حاصل کرنے کا اعزاز حاصل ہے جبکہ ون ڈے میچوں میں انیل کمبلے وکٹوں کی دوڑ میں آگے ہے۔ایک ساتھ کھیلے گئے میچوں میں دونوں پلیئرزکی کارکردگی کیارہی ہے؟ اس کا جائزہ ہفت روزہ ’’اسپورٹس لنک‘‘ نے شائع کیا ہے جو خصوصی اجازت سے کرکٹ اُردوکے قارئین کیلئے پیش ِ خدمت ہے۔

شین وارن اور انیل کمبلے کے ایک ساتھ کھیلے گئے میچوں کا خلاصہ

 میچزآسٹریلیابھارت جیتابے نتیجہ/ٹائی
ٹیسٹ9620/1
ون ڈے13760/0
ٹوئنٹی20کوئی نہیں---/-

ٹیسٹ ٹاکرا:

شین وارن اور انیل کمبلے کی موجودگی میں آسٹریلیا اور بھارت کی ٹیمیں مجموعی طورپر 9بار ایک دوسرے کے مدمقابل آئیں جن میں آسٹریلوی لیگ اسپنر کی ٹیم کو واضح برتری حاصل رہی جس نے چھ میچز میں فتح کے جھنڈے گاڑے جبکہ بھارتی ٹیم کو ان میچوں میں صرف دوبارہی فتح نصیب ہوسکی۔

اُس نے یہ دونوں میچز بھی1998ء کی ہوم سیریزکے دوران چنائی اور کولکتہ کے مقام پر جیتے۔اس کے بدلے میں شین وارن کی ٹیم نے بھارتی سرزمین پر تین ٹیسٹ میچز جیتنے کا بھی اعزاز حاصل کیا جبکہ اپنے ملک میں بھارت کیلئے ناقابل تسخیر ٹیم ثابت ہوئی۔

ایک ساتھ کھیلے گئے 9ٹیسٹ میچوں میں بھارتی لیگ اسپنرکو وکٹوں کی دوڑمیں نمایاں برتری حاصل رہی جس نے ان میچوں کی 17اننگزمیں چاربار اننگزمیں5+وکٹوں کی پرفارمنسز سمیت 49بلے بازوں کو میدان بدر کیاجو ان9میچوں میں کسی بھی بولر کی سب سے زیادہ وکٹیں تھیں جبکہ شین وارن 17 وکٹوں کے فرق سے دوسرے نمبرپر رہے جو ان میچوں میں صرف ایک بار5وکٹوں کی کارکردگی دکھاتے ہوئے 32وکٹیںحاصل کرنے میں کامیاب رہے تاہم اوسط اور اسٹرائک ریٹ کے اعتبار سے وہ بھارتی اسپنر سے کافی پیچھے رہے۔

وکٹوں کے برعکس ون ڈے میچوں میں رنزبنانے میں شین وارن کو قدرے برتری ملی لیکن 19رنز بنانے کیلئے انہوں نے پانچ زائد اننگز بھی کھیلیں
وکٹوں کے برعکس ون ڈے میچوں میں رنزبنانے میں شین وارن کو قدرے برتری ملی لیکن 19رنز بنانے کیلئے انہوں نے پانچ زائد اننگز بھی کھیلیں

بولنگ کی طرح بیٹنگ کے شعبے میں رنزکے اعتبار سے بھی انیل کمبلے کی کارکردگی بہتر رہی جس نے ایک زائد اننگز کھیلتے ہوئے 21.54 کی اوسط سے 39کی بیسٹ اننگز سمیت 237رنز بنائے جبکہ شین وارن ان میچوں میں اُن سے 6رنز پیچھے رہے تاہم انہوں نے اس دوران86رنزکی بڑی اننگز بھی کھیلی۔

ایک ساتھ کھیلے گئے9ٹیسٹ میچوں میںشین وارن اورانیل کمبلے کی بولنگ کارکردگی

بولروکٹیںبہترین5w
انیل کمبلے497/484
شین وارن326/1251

ون ڈے ٹاکرا:

ٹیسٹ کی طرح ون ڈے میچوں میں شین وارن کی ٹیم کو برتری حاصل رہی تاہم اس فارمیٹ میں اس برتری کا مارجن صرف ایک میچ پر مشتمل تھا۔شین وارن اور انیل کمبلے کی موجودگی میں آسٹریلیا اور بھارت کے درمیان مجموعی طورپر13ون ڈے انٹرنیشنلز کھیلے گئے جن میں سے سات میں آسٹریلیااور چھ میں بھارت فتحیاب رہا۔

بولنگ کارکردگی میں انیل کمبلے نے ون ڈے میچوں میں بھی اپنے حریف بولر کو پیچھے چھوڑتے ہوئے 14وکٹیں حاصل کیں جو ان 13میچوں میں ڈیمین فلیمنگ کے بعد کسی بھی بولر کی دوسری زیادہ وکٹیں تھیں جبکہ اس کے مقابلے میں شین وارن دس وکٹوں کے ساتھ نمایاں بولرزکی فہرست میں چھٹے نمبرپر کھڑے دکھائی دئیے۔

ان میچوں میں انیل کمبلے کو ہر40ویں رنزکے عوض وکٹ ملی جبکہ شین وارن کی یہ اوسط56رنز فی وکٹ تک رہی جو ان 13میچوں میں دو سے زائد وکٹیں حاصل کرنے والے بولرزمیں بدترین اوسط تھی۔ ان میچوں میں ہر51ویں گیندپر وکٹ حاصل کرنے والے انیل کمبلے کے مقابلے شین وارن کو فی وکٹ کیلئے 18زائد گیندیں پھینکنا پڑیں جس کے سبب اُن کا 69.2کا اسٹرائک ریٹ ان میچوں میں دو سے زائد وکٹیں حاصل کرنے والے بولروں میں سب سے بدتر اسٹرائک ریٹ ٹھہرا۔

وکٹوں کے برعکس ون ڈے میچوں میں رنزبنانے میں شین وارن کو قدرے برتری ملی لیکن 19رنز بنانے کیلئے انہوں نے پانچ زائد اننگز بھی کھیلیں جس کے سبب رنزکے ساتھ چوکوں اور چھکوں میں بھی انہیں برتری مل گئی تاہم اوسط کے اعتبار سے وہ پیچھے رہے۔

ایک ساتھ کھیلے گئے13ون ڈے میںشین وارن اورانیل کمبلے کی بولنگ کارکردگی

بولروکٹیںبہترین5w
انیل کمبلے143/500
شین وارن102/360

دو حریف ٹیموں کے کھلاڑیوں کے ایک ساتھ کھیلے گئے میچوں کے نتائج اور دونوں پلیئرزکی انفرادی کارکردگی کے موازنے پر مشتمل سلسلہ’’ ٹاکرا‘‘ ہر ہفتے پاکستان میں کھیلوں کے مقبول ترین میگزین ’’اسپورٹس لنک‘‘میں ملاحظہ کیجئے

یہ متعلقہ مواد بھی پڑھیں

مرلی دھرن بمقابلہ ثقلین مشتاق، کون بڑابولر؟

دومختلف ٹیموں کے دونامورکھلاڑیوں کے ایک ساتھ کھیلے گئے میچوں کے نتائج اور دونوں پلیئرزکی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے