Clicky

ہوم / اہم موضوعات / دوسری پوزیشن بچانے کیلئے پاکستان کو افریقہ کی مدددرکار
آسٹریلیاکے خلاف جنوبی افریقہ کی کامیابی سے پاکستان کی دوسری پوزیشن بچ سکتی ہے....(فائل فوٹو)

دوسری پوزیشن بچانے کیلئے پاکستان کو افریقہ کی مدددرکار

پاکستان اور ویسٹ انڈیزکے درمیان تین ٹیسٹ میچوں کی سیریزکے خاتمے پر آئی سی سی نے ٹیموں اور پلیئرزکی رینکنگ جاری کی جس میں پاکستان ٹیم 2-1 سے سیریز جیتنے کے باوجود 2قیمتی پوائنٹس سے محروم ہوگئی مگر اس کیلئے اچھی بات یہ ہے کہ وہ آٹھویں درجے کی ویسٹ انڈین ٹیم سے آخری ٹیسٹ ہارنے کے باوجود آئی سی سی ٹیسٹ رینکنگ میں بدستور دوسرے نمبرپر موجود ہے جبکہ آئی سی سی کے پیشگوئی رینکنگ نظام کے مطابق سیریزمیں ایک بھی شکست پاکستان ٹیم کو ٹیسٹ رینکنگ میں چوتھے درجے پر دھکیلنے کیلئے کافی تھی۔

اب پاکستان ٹیم عالمی نمبرون بھارت سے چھ پوائنٹس پیچھے چلاگیاہے جبکہ اُس سے نچلے نمبرپر موجود آسٹریلیا سے پاکستان ٹیم کا فرق صرف ایک پوائنٹ باقی رہ گیا ہے جو مصباح الحق الیون کیلئے انتہائی خطرناک بات ہے۔

آنے والے دنوں میں ٹیسٹ رینکنگ میں متوقع تبدیلیاں:

سری لنکا اور زمبابوے کے درمیان دو ٹیسٹ میچوں کی سیریز جاری ہے جس کے پہلے میچ میں آئی لینڈرز نے 225رنزکے بڑے مارجن سے فتح حاصل کی ہے جبکہ ہرارے میں شیڈول اگلے میچ میں بھی وہ کامیابی حاصل کرکے سیریزمیں کلین سوئپ کرنے کیلئے فیورٹ ہے۔محض آٹھ ریٹنگ پوائنٹس رکھنے والی زمبابوین ٹیم کے خلاف کلین سوئپ سے بھی سری لنکا کو کوئی فائدہ نہیں ہوگا حتیٰ کہ اُس کا ایک ریٹنگ پوائنٹ بھی نہیں بڑھے گا۔

آسٹریلیا بمقابلہ جنوبی افریقہ (3ٹیسٹ):

سری لنکا اور زمبابوے کے درمیان دو ٹیسٹ میچوں کی سیریز کے بعد ایک اور اہم ترین سیریز میزبان آسٹریلیا اور جنوبی افریقہ کے درمیان جاری ہے ۔ تین ٹیسٹ میچوں کی سیریزمیں اگرکسی بھی مارجن سے فتح حاصل کرلیتی ہے تو وہ پاکستان سے دوسری پوزیشن چھین لے گی۔

سیریز گنوانے کی صورت میں جنوبی افریقی ٹیم ایک درجہ تنزلی کا شکار ہوکر سری لنکا سے بھی نیچے چھٹے نمبرپرچلی جائیگی جو اُس کے موجودہ رینکنگ نظام میں نچلی ترین پوزیشن ہوگی۔

دوسری جانب،سیریزمیں کامیابی پروٹیز کی پوزیشن کو تو بہتر نہیں بناسکے گی مگر سیریز گنوانے کی صورت میں آسٹریلیاکو انگلینڈ کی جگہ چوتھے نمبرپر جانا پڑے گا۔اس سے پاکستان کی دوسری پوزیشن ایکبار پھر مضبوط ہوسکتی ہے کیونکہ اس صورت میں اُس کا اپنے سے نچلے درجے کی ٹیم (انگلینڈ)سے فرق بڑھ کر تین پوائنٹس ہوجائے گا۔

جنوبی افریقی ٹیم حالیہ سیریز میں محض کلین سوئپ کرکے ہی اپنی پوزیشن ایک درجہ بہتر بناسکتی ہے۔بہرحال! اس سیریز میں ہم میزبان آسٹریلیاکی ایک میچ کے مارجن سے سیریزمیں کامیابی کو فرض کرتے ہوئے آگے بڑھتے ہیں۔

بھارت بمقابلہ انگلینڈ(5ٹیسٹ):

9نومبر سے عالمی نمبربھارت اور عالمی نمبر 4 انگلینڈ کے درمیان پانچ ٹیسٹ میچوں کی طویل سیریز شروع ہورہی ہے جس میں میزبان بھارتی ٹیم کو ہی فیورٹ قرار دیاجارہاہے جو اگر سیریزکے دو ٹیسٹ ڈرا کرکے تین ،صفر سے ہی کامیابی حاصل کرلیتی ہے تو مزید چار پوائنٹس حاصل کرکے اپنی ٹاپ پوزیشن مزید مضبوط بنالے گی جبکہ پانچ،صفرکا کلین سوئپ اُسے دوسرے نمبرپرآنے والی آسٹریلوی ٹیم سے بارہ پوائنٹس آگے بڑھاسکتی ہے جس سے بھارتی ٹیم کی ٹاپ پوزیشن انتہائی مضبوط ہوجائیگی۔

بھارت انگلینڈ کیخلاف ہوم سیریز بڑے مارجن سے جیت کر اپنی ٹاپ پوزیشن کو مزید مضبوط بناسکتا ہے
بھارت انگلینڈ کیخلاف ہوم سیریز بڑے مارجن سے جیت کر اپنی ٹاپ پوزیشن کو مزید مضبوط بناسکتا ہے

اس طرح دو میچوں کے مارجن سے سیریز جیتنے کی صورت میں بھارتی ٹیم دو جبکہ ایک میچ کے مارجن سے سیریز جیتنے پرایک ریٹنگ پوائنٹ کی حقدار ہوگی۔

دوسری جانب، اگر انگلش ٹیم اس دورے پر محض سیریز ڈرا کرانے میں ہی کامیاب ہوجاتی ہے تو وہ خود ایک پوائنٹ حاصل کرنے کے ساتھ ساتھ بھارت کو دو ریٹنگ پوائنٹ سے محروم کردے گی جبکہ محض ایک میچ کے مارجن سے فتح حاصل کرکے وہ ایک درجہ ترقی کرکے پاکستان کی جگہ تیسری پوزیشن پر براجمان ہوسکتی ہے جبکہ اس کے ساتھ ساتھ ہوم سیریزمیں ناکامی کا خمیازہ بھارت کو پانچ پوائنٹس کی کٹوتی کی صورت میں بھگتنا پڑے گا جس کے سبب اُس کے اور عالمی نمبر2آسٹریلیاکے پوائنٹس برابر ہوجائیں گے۔

نیوزی لینڈ بمقابلہ پاکستان(2ٹیسٹ):

بھارت کے ٹور میں انگلینڈ کے سیریزجیتنے یا کم ازکم ڈراکرنے کے امکانات انتہائی کم ہیں۔اس لئے اگر اس سیریزمیں بھارت کی کم ازکم ایک مارجن سے فتح کو ’’فرض‘‘کرتے ہوئے پاکستان اور نیوزی لینڈ کے درمیان دو ٹیسٹ میچوں کی سیریز پر نگاہ ڈالیں تو آسٹریلیاکی جنوبی افریقہ کے خلاف ممکنہ جیت کے باوجود پاکستان ٹیم دوبارہ عالمی نمبر2پوزیشن پر براجمان ہوجائے گی جبکہ سیریز ڈرا ہونے یا ایک میچ کے مارجن سے شکست کی صورت میں وہ بدستور تیسرے نمبرپر ہی رہے گی۔

بہرحال! اس حوالے سے کچھ بھی کہناقبل ازوقت ہوگا کیونکہ پاکستان کیلئے رینکنگ میں ترقی کے امکانات کا دارومدارجاری دونوں سیریز (بھارت بمقابلہ انگلینڈ اور آسٹریلیابمقابلہ جنوبی افریقہ)کے نتائج پرہوگاجب تک ان دوسیریزکی شکل نہیں نکل آتی، پاکستان کی رینکنگ پر زیادہ تبصرہ نہیں کیا جاسکتا۔

loading...

یہ متعلقہ مواد بھی پڑھیں

پاکستان تینوں فارمیٹس کی ٹاپ5 ٹیموں سے باہر

بنگلہ دیش کے خلاف دو ٹیسٹ میچوں کی کلین سوئپ مکمل کرکے نیوزی لینڈنے پاکستان …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے