Clicky

تازہ ترین خبر
ہوم / ممالک / پاکستان / پاکستانی کرکٹرزاپنے ہی ساتھیوں کے دشمن بن گئے

پاکستانی کرکٹرزاپنے ہی ساتھیوں کے دشمن بن گئے

ماضی کے کھلاڑیوں کو اکثر پاکستان کرکٹ بورڈسے شکایت رہتی ہے کہ دوسرے ممالک خصوصاً بھارت کی طرح انہیں بورڈکی جانب سے عزت واحترام نہیں ملتا لیکن جب بورڈ سابق کھلاڑیوں کیلئے کوئی اچھا اقدام کرے تو یہی سابق کرکٹرز آپس میں اُلجھ جاتے ہیں ۔

حالیہ دنوں یہ بدترمثال سامنے آئی ہے جب پاکستان کرکٹ بورڈ نے اسٹیڈیمز اور گرائونڈزکو سابق کرکٹرزکے نام سے منسوب کیا۔جیساکہ کراچی ہائی پرفارمنس سینٹرکو حنیف محمد اور ملتان کو انضمام الحق کے نام سے منسوب کیا گیا ۔اس پر کئی کھلاڑیوں نے نہ صرف اعتراض کیا بلکہ بورڈ سے شکایت بھی کردی کہ یہ اسٹیڈیم یا اکیڈمی اُن کے نام سے کیوں منسوب نہیں ہوا۔پاکستان کے روزنامہ ’ایکسپریس‘کی رپورٹ کے مطابق اس شکایت میں عمران خان اور جاویدمیاندادجیسے کرکٹرزکو نظراندازکرنے کا معاملہ بھی اُٹھایا گیا۔

یہ بھی پڑھیں:  فکسنگ کیس: ’پردہ نشینوں‘ کو بچانے کیلئے قربانی کا ’بکرا‘ مل گیا

بورڈ کیلئے یہ ممکن نہیں کہ ہرسابق عظیم پلیئر کے نام سے الگ الگ اکیڈمی یا گرائونڈتعمیر کرے لہٰذا اب بورڈنے ایک کمیٹی قائم کردی ہے جو فیصلہ کرے گی کہ آئندہ کسی اسٹیڈیم یا گرائونڈکوکسی سابق کرکٹرکے نام سے منسوب کیا جائے یا نہیں؟ اگر اس کا جواب منفی ریمارکس کے ساتھ آیا تو پھرآپس میں اُلجھنے والے سابق کرکٹرز یونہی ہاتھ ملتے رہ جائیں گے۔

loading...

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے