Clicky

تازہ ترین خبر
ہوم / ممالک / پاکستان / آسٹریلیاغیرملکی بولرز کیلئے ’’جہنم‘‘ بننے لگا

آسٹریلیاغیرملکی بولرز کیلئے ’’جہنم‘‘ بننے لگا

آسٹریلیامیں فاسٹ بولرزکودُنیاکے کسی بھی دوسرے ملک سے زیادہ بائونس ملتا ہے لیکن حیران کن طورپر وہاں غیرملکی فاسٹ بولرز خاصی حدتک ناکام رہے ہیں۔

آسٹریلیا گزشتہ دو دہائیوں کے دوران غیرملکی فاسٹ بولرز کیلئے انتہائی مشکل سرزمین ثابت ہوئی ہے جہاں صرف ان کنڈیشنز کے عادی فاسٹ بولرز ہی زیادہ کامیاب ہوتے ہیں۔1999ء سے آسٹریلیامیں میزبان فاسٹ بولروں نے 27کی مجموعی اوسط سے وکٹیں حاصل کی ہیںجبکہ غیرملکی بولرزکی مجموعی اوسط 43.57بنتی ہے۔

آسٹریلیامیں ماسوائے میزبان ٹیم کے ،کسی ٹیم کے فاسٹ بولرزکی مجموعی اوسط 35رنز فی اننگز سے کم نہیں ہے۔اس تناظر میں اگرچہ صرف پاکستانی بولرزپراُنگلیاں اُٹھانادرست نہیں ہوگا لیکن یہ بھی حقیقت ہے کہ فاسٹ بولرزپیداکرنے کیلئے مشہورملک کے پیسروں سے ہرکوئی46رنز فی وکٹ سے بہتر کارکردگی کی ہی توقع رکھتا ہے۔

stats-in-aus-table

یہ پیراگراف پاکستان میں کھیلوں کے مقبول ترین میگزین ’’اسپورٹس لنک‘‘کے سلسلے ’اعدادی حقائق‘ سے لیاگیاہے۔یہ مکمل مضمون آپ 25تا31دسمبر2016ء کے ’اسپورٹس لنک‘ میگزین میں ملاحظہ کرسکتے ہیں۔

یہ متعلقہ مواد بھی پڑھیں

ون ڈے سیریز کا اچھے طریقے سے آغاز کرنا چاہتے ہیں :اظہر علی

برسبن: پاکستان کرکٹ ٹیم ٹیسٹ فارمیٹ میں کلین سوئپ شکست کے بعد ایک روزہ سیریز میں …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے