Clicky

ہوم / ممالک / بھارت / دھونی سے زبردستی کپتانی چھیننے کا انکشاف

دھونی سے زبردستی کپتانی چھیننے کا انکشاف

دھونی نے بھارت کو2007 میں ورلڈ ٹوئنٹی 20 اور پھر 2011 میں ون ڈے ورلڈ کپ جتوایا۔ گزشتہ دنوں انہوں نے ٹوئنٹی 20 اور ون ڈے کپتانی سے مستعفی ہونے کا اعلان کرتے ہوئے دونوں فارمیٹس میں بطور عام کھلاڑی کھیلتے رہنے کا اعلان کیا تھا۔

اب انکشاف ہوا ہے کہ دھونی خود مستعفی ہونے کے لئے تیار نہیں تھے مگر انہیں بورڈ کی جانب سے ویرات کوہلی کے لئے راستہ چھوڑنے پر مجبور کیا گیا۔

ذرائع کے مطابق سلیکشن کمیٹی کے چیئرمین ایم ایس کے پرشاد نے 35 سالہ دھونی سے گزشتہ ہفتے ناگپور میں کھیلے جانے والے رنجی ٹرافی سیمی فائنل کے دوران ملاقات کی تھی جس میں انہیں اس فیصلے پر مجبور کیا گیا۔

دلچسپ بات یہ ہے کہ جب دھونی کی جانب سے یہ اعلان سامنے آیا تھا تب پرشاد نے کہا تھا کہ ’’ میں دھونی کو پرفیکٹ ٹائمنگ پر کپتانی چھوڑنے کے فیصلے پر سلیوٹ پیش کرتا ہوں، وہ جانتے ہیں اب ویرات کوہلی کا وقت ہے جوکہ ٹیسٹ کرکٹ میں بہترین کپتانی کرچکے ہیں‘‘۔

دھونی بھارت کے کامیاب ترین کپتان رہے لیکن جس انداز میں انہیں کپتانی چھوڑنے پر مجبور کیا گیا اسے کسی طور پر بھی مناسب قرار نہیں دیا جاسکتا۔

یہ متعلقہ مواد بھی پڑھیں

بھارت کا کونسا کھلاڑی کتنا تعلیم یافتہ ہے!

بچپن سے ہم کہاوت سنتے ہیں آ رہے ہیں کہ ‘پڑھوگے لکھوگے تو بنو گے …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے