Clicky

ہوم / اہم موضوعات / ’’تنگ آکرکہیں یونس خان نہ بن جائوں‘‘

’’تنگ آکرکہیں یونس خان نہ بن جائوں‘‘

یونس خان نے 2014 میں ٹیسٹ کرکٹ میں اچھی فارم کے باوجود ون ڈے ٹیم میں شامل نہ ہونے پر سلیکٹرز کو شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے ’تاریخی‘ جملہ بولا تھا کہ ’’ کیا میں خود کو گولی مارلوں‘‘۔

کامران اکمل بھی ان کے انداز میں ہی توجہ حاصل کرنے کو ہی آخری راستہ سمجھتے ہیں، وہ کہتے ہیں کہ ’’اب صرف ایک ہی راستہ بچا ہے کہ میں یونس بھائی کی طرح بات کروں کیونکہ میں واپسی کے لئے سب کچھ کرکے دیکھ چکا ہوں، دیکھتے ہیں کہ آگے کیا ہوتا ہے کیونکہ ابھی تو ویسٹ انڈیز کے ٹور کے لئے ٹیم کا اعلان نہیں ہوا ہے۔

یہ بھی پڑھیں:  کون دورِ حاضر کا بہترین پاکستانی فاسٹ بولر ہے؟[اعدادوشمار]

پی ایس ایل 2کے آخری پلے آف میچ میں کراچی کنگزکے خلاف شاندار سنچری اسکورکرنے والے کامران اکمل نے یہ باتیں اپنے تازہ انٹرویومیں کہی ہیں۔اُن کا یہ مکمل انٹرویو آپ ’اسپورٹس لنک‘کے تازہ ایڈیشن میں ملاحظہ کرسکیں گے۔

اس انٹرویومیں کامران اکمل کا مزید کہناتھا کہ’’ یہ کتنے افسوس کی بات ہے کہ میں گزشتہ تین برس سے قومی ٹیم میں واپسی کیلئے جدوجہد کررہا ہوں، میں نے سخت محنت کی ہے، رنز اسکور کئے ہیں، میری فٹنس کے ساتھ کوئی مسئلہ نہیں ہے، اب باقی کام سلیکٹرز اور ٹیم مینجمنٹ ہے اور وہی میری ٹیم میں واپسی پر بہتر انداز میں بات کرسکتے ہیں‘‘۔

loading...

یہ متعلقہ مواد بھی پڑھیں

+50 اوپننگ شراکتیں،پاکستان ٹیم سب سے آگے نکل گئی

ویسٹ انڈیزکے خلاف پہلے ون ڈے میچ میں احمد شہزاد اور کامران اکمل نے 85 …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے