Clicky

ہوم / ممالک / آسٹریلیا / پروٹیزکے ہاتھوں کینگروزکی شکست پر دُنیائے کرکٹ کا ردعمل

پروٹیزکے ہاتھوں کینگروزکی شکست پر دُنیائے کرکٹ کا ردعمل

جنوبی افریقہ کے خلاف پہلے پرتھ ٹیسٹ میں 177رنزسے آسٹریلیاکی شکست پر دُنیائے کرکٹ کے کچھ حلقے حیران ہیں کیونکہ اس شکست سے آسٹریلیاکی ہوم گرائونڈزپرمسلسل شکستوں کا تسلسل ٹوٹ گیاہے جبکہ پہلی اننگزمیں معمولی سہی مگر برتری حاصل کرنے کے بعد اُن کاہارجاناحیران کن کہاجارہاہے۔

آخری اننگزمیں پانچ وکٹوں کی کارکردگی سمیت میچ میں سات وکٹیں حاصل کرنے والے مین آف دی میچ پلیئرکگیسو ربادہ نے اپنا اظہارِخیال کرتے ہوئے کہاکہ

’’مجھے فخر ہے کہ سبھی کھلاڑیوں نے کیسے مل کر ٹیم کو مشکلات سے نکال کر فاتح بنایا،ہم ڈیل اسٹین کی خدمات سے محروم ہوگئے تھے جو ہمارا اہم کردار ہے۔جس کے بعد تمام بولروں پر بھاری ذمہ داری عائد ہوئی جو سبھی نے نبھائی ۔جب ڈیل اسٹین میچ سے باہرہواتو پھر ہم نے سب نے ایکسٹراکرکے دکھایا‘‘

پرتھ ٹیسٹ میں 7 وکٹیں حاصل کرنے والے مین آف دی میچ کگیسو ربادا نے جنوبی افریقہ کی آسٹریلیا کے خلاف تاریخی فتح میں اہم کردار اداکیا
پرتھ ٹیسٹ میں 7 وکٹیں حاصل کرنے والے مین آف دی میچ کگیسو ربادا نے جنوبی افریقہ کی آسٹریلیا کے خلاف تاریخی فتح میں اہم کردار اداکیا

ون ڈے کپتان ابراہام ڈی ویلیئرزنے کہاکہ ’’ پروٹیزنے کیا خوب آغاز کیا ہے،پوری ٹیم کی پرفارمنس کافی شاندار رہی‘‘

سابق آسٹریلوی پیسرڈیمین فلیمنگ نے ٹوئٹرپراپنا اظہارِخیال کرتے ہوئے کہاکہ ’’کرکٹ جنوبی افریقہ کو مبارکباد، جن کی ٹیم نے پرتھ میں لگاتار تیسری فتح حاصل کی‘‘

میچ کے دوران زخمی ہوکرباہرہونے والے فاسٹ بولر ڈیل اسٹین نے ٹوئٹ کیا کہ ’’ مجھے اپنے لڑکوں پر بہت فخر ہے، کیا بہترین کوشش تھی،جو آئے اور آخری وکٹ لیکر دم لیا۔ نیک خواہشات کیلئے تمام لوگوں کا شکریہ‘‘

جنوبی افریقی آل رائونڈرالبائی مورکل نے ٹوئٹ کیا کہ ’’ یہ جنوبی افریقہ کی چند بہترین ٹیسٹ فتوحات میں سے ایک ہے‘‘

اُن کے آسٹریلیاکے سابق کپتان مائیکل کلارک،ڈین جونز اور دُنیاکے دیگرکرکٹرزنے بھی جنوبی افریقہ کی اس کامیابی پر اپنا اظہارِخیال کیا ہے جو ذیل میں من و عن شائع کیا جارہاہے۔

loading...

یہ متعلقہ مواد بھی پڑھیں

ہاشم آملہ بھی ڈوپلیسی کیلئے اُٹھ کھڑے ہوئے

جنوبی افریقہ کے قائمقام کپتان فاف ڈوپلیسی پربال کی ساخت خراب کرنے کا الزام عائد …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے