Clicky

ہوم / ممالک / بنگلہ دیش / بنگلہ دیش میں فکسنگ اسکینڈل،دوکرکٹرزپر10سال پابندی

بنگلہ دیش میں فکسنگ اسکینڈل،دوکرکٹرزپر10سال پابندی

گزشتہ تین چار سالوں تک قدرے حالات بہتررہنے کے بعد اب ہرملک میں کرکٹ میں فکسنگ اور کرپشن کے اسکینڈلزتواتر کے ساتھ منظر عام پر آنا شروع ہوگئے ہیں۔

حالیہ دنوں میں پی ایس ایل 2اور کرکٹ جنوبی افریقہ کے ڈومیسٹک کرکٹ میں اسپاٹ فکسنگ کے الزام میں درجن بھر کے قریب کھلاڑی معطل ہوچکے ہیں۔اب بنگلہ دیش کرکٹ میں بھی ایسا ہی اسکینڈل منظر عام پر آگیا ہے جس میں ایک دوکھلاڑیوں نہیں بلکہ پوری دو ٹیموں،اُس کے کھلاڑیوں سمیت تمام آفیشلز پربھی پابندی کردی گئی ہے۔

ڈھاکہ لیگ کے رائونڈمیچوں میں دو بولروں تسنیم حسن اور سجن محمود کی مشکوک سرگرمیاں سامنے آئی تھیں ۔ڈھاکہ سکینڈ ڈویژن لیگ کے ایک میچ میں لعلمتیا کلب کے سجن نے چار گیندوں پر92رنز دے ڈالے تھے جبکہ فیئرفائٹر کے تسنیم نے 1.1اوورزمیں69رنز دئیے۔

بنگلہ دیشی کرکٹ بورڈنے کمیٹی قائم کرکے اس معاملے کی تحقیقات کرائیں جس کے نتیجے میں دونوں بولروں پر دس، دس سال کی پابندی کے علاوہ اُن کے کلبوں پر پانچ پانچ سالوں کی پابندیاں عائد کردی گئیں جبکہ دونوں ٹیموں کے کپتانوں، منیجرز اور کوچز کو5،5سالوں کیلئے معطل بھی کردیا گیاہے۔

loading...

یہ متعلقہ مواد بھی پڑھیں

فکسنگ اسکینڈل،سابق کرکٹرزنے بھی منہ کھول دئیے

پاکستان کرکٹ اس وقت اسپاٹ فکسنگ اسکینڈل میں اُلجھی ہوئی ہے،ہرزبان پر حالیہ اور ماضی …

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے